ایشیا میں دل کی بیماریاں کسی وبا کی طرح پھیل رہی ہیں، تحقیق

ایک سروے سے معلوم ہوا ہے کہ دنیا بھر میں امراضِ قلب سے سالانہ جتنی اموات ہورہی ہیں ان میں سے آدھے واقعات کا تعلق ایشیائی ممالک سے ہے، جہاں یہ مرض ایک وبا کی صورت اختیار کرچکا ہے۔

جرنل آف امریکن کالج آف کارڈیالوجی (جے اے سی سی) نے اپنی تازہ اشاعت میں اس خوفناک رحجان کو ایک وبا قرار دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایشیا میں دل اور دل کی رگوں (کارڈیاویسکیولر) امراض کی شرح تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ جے اے سی سی ایشیا نے زور دیا ہے کہ مقامی سطح پرامراضِ قلب کو روکنے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لینا بہت ضروری ہے۔

1990سے 2019 کے درمیان سالانہ دل کے امراض سے مرنے کی شرح سالانہ 56 لاکھ سے ایک کروڑ آٹھ لاکھ تک پہنچ چکی ہے۔ یعنی اموات کی شرح 39 فیصد تک بڑھ چکی ہے اور ان میں اکثرافراد کی عمریں 70 برس سے کم ہے یعنی اکثراموات قبل ازوقت رونما ہورہی ہیں۔ یہ شرح امریکا سے بھی زائد ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں