وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا دورہ جرمنی نہایت اہمیت کا حامل ہے

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا دورہ جرمنی نہایت اہمیت کا حامل ہے 2012 کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب پاکستان اور جرمنی کے تعلقات میں سر گرمی دیکھنے کو ملی ہے دوسری اہم ترین بات یہ کہ پاکستان، جرمنی دوستی کورواں سال70سال مکمل ہوگئے، 15 اکتوبر1951 کوپاکستان کےساتھ سفارتی تعلقات استوارکیے۔70 ویں سالگرہ کے موقع پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا جرمنی میں ہونا پاکستان کے لئے اس دوستی کو مضبوط کرنا ہے۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور جرمن ہم منصب نے نیوز کانفرنس کی، جرمن وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان کاخطے میں استحکام کیلئے اہم کردار ہے، افغانستان میں تشدد کے خاتمے اورامن کیلئےمذاکرات جاری رہنے چاہئیں۔جرمن وزیر خارجہ نے خطے میں امن کے لیے پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ خطے میں امن کیلئے پاکستان نے بہت قربانیاں دی ہیں۔انہوں نے کہا کہ خطے میں پاکستان ہمارے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے، افغان امن عمل میں پاکستان کا کردار اہمیت کا حامل ہے۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جرمن وزیرخارجہ کے دورہ پاکستان میں بہت مفید امور پر بات ہوئی، پاکستان اورجرمنی میں 0 7سال سے دوستانہ اور مستحکم تعلقات ہیں، پاکستان جرمن ٹیکنالوجی ٹرانسفر سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے۔وزیرخارجہ نے کہا کہ جی ایس پی پلس کے حصول میں جرمنی کے تعاون کے شکر گزار ہیں، پاکستان جرمنی کے ساتھ نئے اقتصادی تعلقات چاہتاہے، ایف اے ٹی ایف کو سیاسی فورم بننے سے بچانےکیلئے جرمنی کے شکرگزار ہیں۔انہوں نے کہا کہ ویکسین کی فراہمی کیلئے جرمنی کے تعاون کے شکر گزار ہیں ، وزیراعظم عمران خان جرمنی کا دورہ کرنے کے خواہمشند ہیں ، وزیراعظم عمران خان جرمنی کادورہ کرکے جرمن قیادت سےملنے کےخواہشمند ہیں۔
اس اہم ترین دورہ کے موقع پر سفارت خانہ پاکستان برلن میں ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن جرمنی اور پشتون آرگنائزیشن یورپ کے وفود نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی۔ وفود میں صدر ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن عنصر بٹ سینئر نائب صدر محمد اکرم ،حاجی جاوید قادری ، چوہدری محمد حسین لوسر،چیئرمین ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن یورپ چوہدری پرویز اقبال لوسر ،چیئرمین پشتون آرگنائزیشن یورپ نوید خان ، صدر عرب گل ،محمد جمیل خان اور دیگر ارکان نے ملاقات کی۔
اس موقع پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کے دورہ کی اہمیت کو سراہا گیا اور کہا کہ اس دورہ کے دور رس نتائج سامنے آئیں گے جرمنی اور پاکستان کے سفارتی تعلقات کا ایک نیا عہد شروع ہوگا۔ اور اس میں سفیر محترم ڈاکٹر محمد فیصل کا کردار بھی اہم ہے جنہوں نے دن رات اس دورہ کو کامیاب بنانے کے لئے کام کیا۔ وفود نے کہا کہ ہمیں اس طرح کے سفرا چاہیئے جو پاکستان اور یورپی ممالک کے درمیان مضبوط تعلقات بنا سکیں۔ پشتون آرگنائزیشن کے وفد نے فاٹا کی موجودہ صورتحال پر بھی وزیر خارجہ کو بریف کیا۔

ویڈیو اور تاصویر کیلیے
https://web.facebook.com/profile.php?id=100027059735653&__cft__[0]=AZVyvjO7fQuLirOBpWTqCqq_EDq76I_9LXi4J__1fL_qx3wFtNHtb8KAC60uSqNvIL7C7wCkxf10wAtvyQ0i5hEw7ARbs5uUw6Lh5jZK6atFsoqAjkK-GJCmNUQIBxPXT1AZ9w-ELjRTU7SfR4-HqlCG&__tn__=-]C%2CP-R

اپنا تبصرہ بھیجیں