کچھ قوتیں دباؤ ڈالنا چاہتی ہیں لیکن اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کروں گا، بلاول

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کچھ قوتیں مجھ پر دباؤ ڈالنا چاہتی ہیں لیکن میں اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کروں گا۔

مظفر گڑھ میں خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ حکومت نے ایک سال میں معیشت کا بیڑا غرق کر دیا ہے، نااہل ٹولہ ملک سنبھال سکتا ہے نہ معیشت، احتساب کے نام پر سیاسی انتقام کی حد کر دی گئی ہے، یہ کیسا احتساب ہے جو صرف اپوزیشن کا ہو رہا ہے، کیس سندھ میں ہوتا ہے لیکن چلتا پنڈی میں ہے، کچھ قوتیں مجھ پر دباؤ ڈالنا چاہتی ہیں لیکن میں اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کروں گا، عوام کو حکومت کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑیں گے، عوام کے حقوق کے لیے لڑتا رہوں گا۔

چیئرمین پی پی پی کا کہنا تھا کہ پہلے بھی خبردار کیا تھا اس ملک میں کٹھ پتلی کو مسلط کرنے کی تیاری کی جارہی ہے، پھر وہی ہوا 25 جولائی کو سلیکشن ہوئی اور بدترین دھاندلی کی گئی، پولنگ ایجنٹس کو پولنگ اسٹیشن سے باہر پھینکا گیا اور عوام کے ووٹ پر ڈاکا ڈالا گیا، کسی جماعت نے انتخابات کو تسلیم نہیں کیا۔
بلاول زرداری نے کہا کہ میں نے پہلی تقریر میں عمران خان کو کہا تھا کہ انہوں نے عوام سے کئے اپنے وعدے پورے کیے تو تعریف کریں گے لیکن وعدے پورے نہ کیے تو بھرپور مخالفت ہوگی، یہ حکومت پچھلے10 سال کارونا رو رہی ہے اور ہر قسم کا الزام لگا رہی ہے، لیکن ان سے کوئی پوچھے 10 سال پہلےسونے کی قیمت کیا تھی اور آج کیا ہے، 10 سال قبل پیٹرول، آٹا، گھی،چینی اور دیگر اشیائے خورو نوش کس قیمت پر دستیاب تھے، گیس اور بجلی کی قیمتیں کیا تھیں، میں اس سلیکٹڈ حکومت کو بے نقاب کررہا ہوں، اور اگر عوام نے کہا تو پیپلزپارٹی دھرنے کی سیاست بھی کرے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں