کراچی میں صفائی مہم:صوبائی حکومت کے عدم تعاون پر وفاق سے مدد مانگی: وسیم اختر

میرے پاس اس کے علاوہ کوئی آپشن نہیں تھا،کے ایم سی ان وسائل میں کام نہیں کرسکتی ،مشترکہ کوشش ہے شہر صاف ہو،پی ڈی ایم مزید مشینری فراہم کرے ، میئرکی گفتگو مہم کسی ادارے کی نہیں بلکہ شہریوں کی بن چکی، شہر کو مل کر صاف کرنا ہے ، صفائی مہم کے نام پرکسی کو چندہ نہ دیاجائے ، مختلف نالوں کوصاف کیا جارہا ہے ، وفاقی وزیر علی زیدی
کراچی(اسٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی، میئر کراچی وسیم اختر اورڈپٹی میئر ارشد حسن نے ہفتہ کو بارش کے بعد شہر کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے شہر کا 5 گھنٹے سے زائد طویل دورہ کیا۔ انہوں نے ہجرت کالونی، پی آئی ڈی سی، قیوم آباد، منظور کالونی، محمود آباد، ایڈمن سوسائٹی، بلوچ کالونی، کورنگی، لانڈھی، شاہ فیصل، شارع فیصل اسٹار گیٹ، گلستان جوہر، یونیورسٹی روڈ گلشن اقبال، سہراب گوٹھ، سرجانی ٹاؤن ،گودھرا، نیو کراچی،سخی حسن، ناظم آباد، نارتھ ناظم آباد، اورنگی ٹاؤن اور دیگر علاقوں کا دورہ کیا۔ مختلف جگہوں پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ کراچی میں وفاقی حکومت کے اشتراک سے جو صفائی مہم کا آغاز ہوا ہے اس میں خاصی کامیابی ہوئی،کئی نالوں پر صفائی کا کام بروقت شروع ہونے سے بارش میں پانی کی نکاسی میں بہتری آئی ہے ۔گجر نالے کو گہرائی تک صاف کیا جا رہا ہے ۔ محمود آباد،کورنگی اور شہر کے متعدد نالوں کی صفائی کا کام جاری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اب یہ مہم کسی سرکاری ادارے کی نہیں بلکہ کراچی کے شہریوں کی بن چکی ہم نے اس شہر کو مل کر صاف کرنا ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر نے کہا کہ کوئی بھی شہری صفائی مہم کے نام سے کسی کو چندہ نہ دے ۔ انہوں نے کہا کہ میئر کراچی وسیم اختر اور ڈپٹی میئر کراچی ارشد حسن کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ ہم سب مل کر شہر میں صفائی مہم چلا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہجرت کالونی نالہ زیادہ خراب پوزیشن میں ہے یہ کے پی ٹی کی زمین ہے 30 اگست سے قبل کے پی ٹی اس کو مکمل صاف کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس مہم میں وفاق مکمل شامل ہے کابینہ اجلاس میں اس پر تفصیل سے بریفنگ دی گئی۔ میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ گزشتہ بارشوں کے تجربہ سے فائدہ اٹھاتے ہوئے بہتر حفاظتی اتنظامات کئے ہیں۔ صوبائی حکومت کے عدم تعاون کے باعث وفاقی حکومت سے تعاون کی درخواست کی کیونکہ یہ شہر کا مسئلہ ہے ۔ کے ایم سی ان وسائل میں یہ کام نہیں کرسکتی اور صوبائی حکومت وسائل دینے کیلئے تیار نہیں۔ میرے پاس اس کے علاوہ کوئی آپشن نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کے درمیان رابطہ ہے صفائی کا کام شروع کیا ہے جو جاری رہے گا مشترکہ کوشش ہے کہ شہر صاف ہو۔ ہمارے پاس جو مشینری ہے وہ سڑک پر ہے ۔ پی ڈی ایم مزید مشینری دے کر ہماری مدد کرے ۔ انہوں نے کہا کہ قربانی کی آلائشیں اٹھانا بنیادی طور پر ڈی ایم سی کی ذمہ داری ہے تاہم ہمارا ان کے ساتھ رابطہ ہے ، بہتر انتظامات کئے گئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں