فرانس میں یوم پاکستان کی تقریب

یوم پاکستان منانے کے لئے پیرس میں آج پاکستانی سفارتخانے میں منعقدہ ایک تقریب میں پاکستان کا پرچم لہرایا گیا۔ کوویڈ ۔19 کی جاری تیسری لہر کے پیش نظر فرانسیسی حکومت کی طرف سے حالیہ لاک ڈا ون کی وجہ سے اس تقریب میں شرکت پر پابندی عائد تھی۔
اس موقع پر صدر مملکت اور وزیر اعظم پاکستان کے پیغامات پڑھ کر سنائے گئے۔

ان کے ریمارکس میں چارج ڈی ایفئرس۔ مسٹر ایم امجد عزیز قاضی نے کہا کہ اس دن نے تاریخ کا رخ بدلا کیونکہ برصغیر پاک و ہند کے مسلمانان نے آل انڈیا کے سالانہ اجلاس میں قائداعظم محمد علی جناح کی سربراہی میں اپنے لئے الگ الگ وطن کا مطالبہ کرنے کی قرارداد منظور کی۔ مسلم لیگ 23 مارچ 1940 کو۔

انہوں نے کہا کہ اس دن ہم قائد اور تحریک پاکستان کے دیگر رہنماؤں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں جنہوں نے قرارداد کی منظوری کے بعد صرف سات سالوں میں پاکستان کو حقیقت کا روپ دھارادیا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ قائد اعظم کی جانب سے وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان کو اسلامی جمہوری فلاحی ریاست بنانے کے لئے جاری کردہ راہ اب بھی ریاض مدینہ کے ماڈل پر جاری ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس دن پاکستان نے غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر کے ان بھائیوں اور بہنوں کی حمایت کی توثیق کی ہے جنہیں بھارتی فوجی محاصرے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان اس وقت تک کاشمیری عوام کو سیاسی ، سفارتی اور اخلاقی مدد فراہم کرتا رہے گا جب تک کہ انہیں یو این ایس سی کی قراردادوں کے مطابق ان کا حق خود ارادیت حاصل نہیں ہوجاتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں